سونم نے جنسی ہراسانی پر اداکاراؤں کی خاموشی کو مجبوری قرار دیدیا

ممبئی: بالی ووڈ اداکارہ سونم کپور نے کہا ہے کہ انڈسٹری میں بہت سی اداکارائیں جنسی ہراسانی پر بول اٹھتی ہیں تاہم کچھ اداکارائیں ایسی بھی ہیں جو خاموش رہنا ہی بہتر سمجھتی ہیں۔

ہالی ووڈ سے شروع ہونے والی می ٹو مہم نے بالی ووڈ کو بھی اپنی لپیٹ میں لے لیا ہے اور اب تک کئی نامور شخصیات پر جنسی ہراسانی کے الزامات دیکھنے میں آئے ہیں۔ ابتداء سے ہی می ٹو مہم کی حمایت کرنے والی سونم کپور نے اپنی ایک ساتھی اداکارہ کے ساتھ ہونے والی جنسی ہراسانی سے متعلق بتایا۔

بھارتی میڈیا کے مطابق سونم کپور نے ایک انٹرویو میں کہا کہ انڈسٹری میں بہت سی اداکارائیں ایسی ہیں جو جنسی ہراسانی کے خلاف بول اٹھتی ہیں لیکن کچھ اداکارائیں ایسی بھی ہوتی ہیں جو خود کے ساتھ ہوئی ناانصافی کے خلاف اپنے دفاع میں خاموش رہنا ہی بہتر سمجھتی ہیں۔

سونم کپور نے اپنی ایک دوست سے متعلق بتایا کہ اکثر خواتین ایسی ہیں جو ساری زندگی جنسی ہراسانی کے متاثرین کے طور پر بسر کرتی ہیں اور کسی کو کچھ نہیں کہتیں، ان میں سے ایک میری دوست بھی ہے جس کو کئی بار جنسی طور پر ہراساں کیا گیا لیکن وہ صرف اپنے اہل خانہ اور سات بہن بھائیوں کی وجہ سے خاموش رہی کیوں کہ وہ گھر کی واحد کفیل ہے۔

واضح رہے کہ سونم کپور رواں ماہ ریلیز ہونے والی فلم ’ایک لڑکی کو دیکھا تو ایسا لگا‘ میں ہم جنس پرست لڑکی کا کردار ادا کر رہی ہیں۔

اپنا تبصرہ بھیجیں